سہارا ملے تو ہم بھی پارلیمنٹ جاسکتے ہیں اور وزیراعظم بھی بن سکتے ہیں، خواجہ سرا

سہارا ملے تو ہم بھی پارلیمنٹ جاسکتے ہیں اور وزیراعظم بھی بن سکتے ہیں، خواجہ سرا

لاہور: پاکستان میں جہاں خواجہ سراؤں کی بڑی تعداد ناچ گانے اور بھیک مانگنے میں لگی ہے وہیں کئی خواجہ سرا اپنی صلاحیتوں کی بدولت دنیا میں پاکستان کا نام روشن کررہے ہیں۔

لاہورکی خواجہ سرا جنت علی کا کہنا ہے اگر والدین دھتکارنے اور نفرت کرنے کی بجائے سہارا دیں توخواجہ سرا بھی تمام شعبوں میں نام پیداکرسکتے ہیں، وہ پارلیمنٹ میں جاسکتے اور وزیراعظم بھی بن سکتے ہیں۔

جنت علینے کہا کہانہوں نے ایچ آر اور مارکیٹنگ میں ایم بی اے کیا، یونیورسٹی کی گولڈمیڈلسٹ ہیں۔ 26 ممالک میں پاکستان کی نمائندگی کرچکی ہوں۔ متعددڈراموں اورایک فلم میں کام کررہی ہوں اورآرٹسٹ بھی ہوں۔ جنت علی اس پارلیمانی کمیٹی کی پرائیویٹ ممبر بھی تھیں جس کی کوششوں سے خواجہ سراؤں کی علیحدہ شناخت کا قانون پاس ہوا۔
انہوں نے بتایا کہ جن خواجہ سراؤں کے قومی شناختی کارڈ پرجنس مرد یا عورت لکھا ہے وہ بنیادی حقوق حاصل نہیں کرسکتے،اگر شناختی کارڈ پرخواجہ سرا لکھ دیاجائے تو پھر وہ حج اورعمرہ نہیں کرسکتے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *