بی ایچ یو پر آر ایچ سی کا بور ڈ تو لگا دیا گیا مگر سٹاف پورا کرنے کی زحمت کی گی نہ ادویات فراہمی کے انتظامات

بی ایچ یو پر آر ایچ سی کا بور ڈ تو لگا دیا گیا مگر سٹاف پورا کرنے کی زحمت کی گی نہ ادویات فراہمی کے انتظامات

چکوٹھی ( نمائندہ خصوصی)وزیراعظم کے حلقہ انتخاب سیز فائر لائن پر واقع کھلانہ ویلی کا واحد ہسپتال عوام کے لئے سر درد بن گیا کہنے کو تو، کھلانہ ویلی کے ہسپتال کو آر ایچ سی کہا جاسکتا ہے مگر نام کی حد تک سہولیات فرسٹ ایڈ یونٹ سے بھی کم ہیں پانچ سال قبل بیسک ہیلتھ یونٹ کو آر ایچ سی کا درجہ دیا گیا ہسپتال کا درجہ تو بڑھایا گیا مگر سٹاف دیگر ضروریات پوری نہیں کی گئی ویلی کے ہسپتال میں نہ تو ڈاکٹر نہ ایمرجنسی کی سہولیات نہ ہی ایکسرے مشین کی سہولت نہ لیبارٹری نہ ڈنٹیل اور نہ ہی آر ایچ سی لیول کےہسپتال کی سہولیات فراہم کی گئی ستم ظریفی کا عالم ہے کہ سیز فائر لائن پر واقع ہسپتال میں ایمرجنسی کی صورت میں کوئی سہولت نہیں دن دو تین بجے کے بعد مرہم پٹی کرنے والا بھی کوئی نہیں ہوتا سوائے ڈرائیو چوکیدار کے آر ایچ سی میں چار سے زائد ڈاکٹرز کی سہولیات فراہم کرنا دور کی بات پہلے سے ڈاکٹرز کی دو آسامیوں پر ایک میڈیکل آفیسر مردانہ کئی سالوں سے آن ڈیوٹی تنخواہ وصول کر رہا ہے جبکہ دوسری لیڈی ڈاکٹر مہینہ میں کھبی کھبار چند گھنٹوں کے لئے آتی ہے ایک ایک ماہ غائب چھ چھ ماہ ادویات تک ہسپتال میں فراہم نہیں کی جاتی ایل ایچ وی کا تبادلہ کیا گیا متبادل اسکی جگہ جو ایل ایچ وی تعینات کی گئی وہ ہفتہ میں ایک دو بار چند گھنٹوں کے لئے منہ د کھا کر غائب عوام علاقہ کی جانب سے وزیراعظم کی بار بار اس جانب توجہ مبذول کروانے کے باوجود کوئی شنوائی نہیں ہو سکی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *