کیا فرائی پان آپ کی صحت کیلئے خطرناک ہوسکتا ہے؟

کیا فرائی پان آپ کی صحت کیلئے خطرناک ہوسکتا ہے؟

کراچی: ہم سب بہت سی ایسی بیماریوں کی وجوہات سے ناواقف ہوتے ہیں جس کی وجہ ہمارے اپنے ہی کچن میں موجود عام چیزیں ہوتی ہیں جو ہارمونز کے مسائل، امراضِ جگر اور کینسر جیسی بیماریوں کا باعث بن سکتی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ کچن میں موجود ان عام چیزوں کی وجہ سے ہمیں متعدد خطرناک بیماریاں لاحق ہو سکتی ہیں اور اگر آپ ان بیماریوں پر قابو پانا چاہتے ہیں تو آپ کو اپنے کچن سے ان تمام چیزوں کو پھینکنا پڑسکتا ہے ۔

کچن میں موجود وہ نان اسٹک فرائی پان (کڑاہی) ایک ایسی سہولت ہے جس سے کچن میں کام کرنے والی تقریباً تمام ہی شہری خواتین لطف اندوز ہوتیں ہیں کیوں ان برتنوں کو استعمال کرنا اور بعداز استعمال دھونا انتہائی آسان ہے لیکن خبردار یہ فرائی پان (کڑاہی) آُپ کی صحت کے لئے خطرناک بھی ثابت ہوسکتا ہے۔

پاہرین کا کہنا ہے کہ نان اسٹک فرائی پان (پین) بنیادی طور پر دھات کے بنے ہوئے ہوتے ہیں اور ان کے اوپر ‘ٹیفلون (پولیٹراٹرفلیووروتھیلین)’ نامی پرت چڑھی ہوئی ہوتی ہے جو کہ مختلف کیمیائی مادوں کا مجموعہ ہے، جن میں سے ایک کا نام پرفلورو-اوکٹینک یا پی ایف اواےہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اسی کیمیکل کے باعث جب بھی نان اسٹک برتنوں کو زیادہ درجہ حرارت پر استعمال کیا جاتا ہے تو ان برتنوں سے کیمیائی دھواں برآمد ہوتا ہے جو کہ ٹیفلون فلو نامی بیماری کا باعث بنتا ہے۔

خیال رہے بات یہاں ختم نہیں ہوتی، جدید ریسرچ سے ثابت ہوا ہےکہ فلورو-اوکٹینک نامی یہ کیمیکل جب تجربہ گاہ کے چوہوں پر استعمال کیا گیا تو ان میں ایسی رسولیاں پیدا ہونے لگیں جو کہ کینسر کا باعث ہوتی ہیں جبکہ ابھی اس کیمیکل کے استعمال سے انسانی جسم میں کینسرکا مرض پیدا ہونے کی مستند شواہد نہیں ملے ہیں لیکن اس خطرے کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہا اس خطرے سے بچاؤ کے لئے عوام کو چاہیے کہ نان اسٹک برتنوں میں صرف لکڑی کےچمچے استعمال کریں تاکہ ٹیفلون کی تہہ اکھڑ کر کھانے میں شامل نہ ہوسکے اور اگر برتن کی سطح سے یہ تہہ اترنے لگے تو فوری طور پر اس کا استعمال ترک کردیں یا اس کو تبدیل کریں۔

ماہرینِ صحت کے مطابق ترقی یافتہ شہروں میں 90 فیصد تک لوگ نان اسٹک برتنوں میں کھانا بناتے ہیں اور نان اسٹک فرائی پان پر  اس کیمیکل کی کوٹنگ اس قدر خطرناک ہوتی ہے کہ اس سے دماغ اور پھیپھڑوں کی بیماریوں کے خطرات بھی پیدا ہو سکتے ہیں اس لیے  ضروری ہے کہ آپ نان اسٹک برتنوں کی جگہ لوہے کے برتن میں کھانا بنائیں جو کہ با آسانی مارکیٹ میں دستیاب ہوتے ہیں۔

نوٹ: یہ معلومات مختلف شائع شدہ تحقیقات سے حاصل کی گئی ہیں اور اگر آپ کسی بیماری میں مبتلا ہیں تو اپنے معالج سے ضرور مشورہ کریں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *