حضرت عمررضی اللہ عنہ نے اپنے کندھے سے نیند کا غبارجھاڑا اور رعایا کی خبر گیری کیلئے نکل پڑے

حضرت عمررضی اللہ عنہ نے اپنے کندھے سے نیند کا غبارجھاڑا اور رعایا کی خبر گیری کیلئے نکل پڑے

حضرت عمرؓ نے اپنے کندھے سے نیند کا غبارجھاڑا اور رعایا کی خبر گیری کیلئے نکل پڑے۔ آپؓ نے دیکھا کہ ایک عورت اپنی کمر پر پانی کی مشک اٹھائے ہوئے ہے۔ حضرت عمرؓ نے اس کے احوال دریافت کئے تو اس نے بتایا کہ اس کے پاس کوئی خادمہ نہیں ہے۔ اس لئے وہ اپنے بچوں کو پانی پلانے کے لئے رات کے وقت خود ہی نکلی ہے اور دن کے وقت خوف خدا کی وجہ سے اسے نکلنا پسند نہیں ہے۔ آپؓ نےجب اس کے حالات سنے تو بڑے پسیجے اور خود اس کی مشک اٹھاکر اس کے گھر تک گئے۔ پھر فرمایا کہ تم صبح کے وقت عمرؓ کے پاس آنا، وہ تمہارے لئے کسی خادمہ کا انتظار کر دیں گے۔ وہ کہنے لگی کہ میں ان تک نہیں پہنچ سکتی۔ حضرت عمرؓ نے فرمایا کہ تمہیں ان شاء اللہ وہ مل جائیں گے۔ چنانچہ جب وہ عورت صبح کے وقت ان کے پاس پہنچی تو دیکھا کہ عمرؓ تو وہی ہیں۔ اس عورت نے حضرت عمرؓ کو پہچان لیا، پھر بھاگ گئی، حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے اس کیلئے خادمہ اور نفقہ کا حکم دیا اور اس کے چلے جانے کے بعد اس کو بھیج دیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *