’’نصف رات آپ جیسی گزارتا ہوں اورباقی نصف آپ سے بہتر ‘‘

’’نصف رات آپ جیسی گزارتا ہوں اورباقی نصف آپ سے بہتر ‘‘

ایک رات محمودغزنوی معمول کےگشت پرتھے، کہ ایک شخص کوتندور کےپاس سویادیکھا تو اسکواٹھاکرپوچھاکہ وہ کون ہے،جواب میں اس شخص نے جواب دیا کہ وہ ایک مزدورہے اور دن بھرمزدوری کرتا ہےاور رات کواس تندور کےپاس ہی سوجاتا ہے سلطان نےپوچھا کہ اس سردی میں اس کی رات کس طرح گزرتی ہے تواس پر مزدور نےجوجواب دیا

اس نے سلطان کو ہلاکررکھ دیا مزدور نےکہاجناب نصف رات آپ کےانداز میں گزرتی ہے اور نصف رات آپ سےاچھےاندازمیں گزارتا ہوں سلطان نےبڑی حیرت سےپوچھاکہ وہ کیسے؟ مزدور نےجواب دیاکہ جب تک تندور گرم رہتاہے توآپ کی طرح نیند سے لطف اندوز ہوتاہوں اورجب تندور ٹھنڈا ہوجاتاہےتواٹھ کےاللہ کی عبادت شروع کردیتا ہوں جوآپ کےمقابلے میں وقت کابہتراستعمال ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *