خاتون ڈی ایس پی جب اپنے انسپکٹر باپ کے سامنے آئی تو والد نے کیا کیا، سوشل میڈیا پر تصویر تیزی سے پھیلنے لگی

خاتون ڈی ایس پی جب اپنے انسپکٹر باپ کے سامنے آئی تو والد نے کیا کیا، سوشل میڈیا پر تصویر تیزی سے پھیلنے لگی

امراوتی ،بھارت(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی پولیس انسکپڑ کی اپنی افسر بیٹی کو سیلوٹ کی ایک تصویر سوشل میڈیا کی زینت بنی ہوئی ہے۔ ہر ماں باپ اپنی اولادکوایک کامیاب اور قابل شخص کی حیثیت سےدیکھنا چاہتے ہیں۔ اور بیٹی کی کامیابی تو والدین کا سر خاندان بھر میںفخر سے بلند کردیتی ہے۔ لیکن جب بیٹی پولیس افسر بن کر اپنے باپ سے بھی اونچے عہدے پرپہنچ جائےاور دونوں کا وردی پہن کر دوران ڈیوٹی آمنا سامنا ہو جائے تو کیا ہو گا۔ ایسا کم ہی دیکھنے میں آتا ہے۔ تاہم ایسے ہی ایک نایاب منظر کو سوشل میڈیا پر وائرل ہوتے ہوئے دیکھ لیا گیا ہے۔ جب ایک بھارتی خاتون

پولیس افسر کو اس کا انسپکٹر والد سیلوٹ مار رہا ہے۔بھارتی ریاست آندھر پردیش کے شہر تروپتی میں پولیس کے سرکل انسپکٹر شیام سندر کو اس وقت اپنی بیٹی اور ڈپٹی سپرٹنڈنٹ آف پولیس (ڈی ایس پی) جسی پرشانتی کو سیلوٹ مارنا پڑگیا جب بیٹی پولیس کی تقریب میں شرکت کیلئے پہنچیں۔پرشانتی نے انجینئرنگ کی تعلیم مکمل کرنے کے بعد 2018 میں ریاستی کمیشن لیا اور ڈی ایس پی کے عہدے پر تعینات ہوئیں۔والد کو اپنی بیٹی کو اُس وقت سیلوٹ کرنا پڑا جب بیٹی تروپتی میں پولیس ڈیوٹی میٹ کیلئے پہنچیں اور اس موقع پر باپ بھی جذبات پر قابو نہ رکھ سکے۔
بھارتی میوزک انڈسٹری کاسب سے بڑانام چل بسا ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی فلم انڈسٹری کے نغمہ نگار انیل پنچورن کو کرونا وائر س کےعلاج کے دوران جان لیو ا ہار ٹ اٹیک ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی فلم انڈسٹری کے نغمہ نکار انیل پنچورن 55سال کی عمر میں انتقال کر گئے ۔کرونا وائر س کے علاج کے دوران انھیں ہارٹ اٹیک ہو گیا۔گزشتہ دنوں نغمہ نگار کورونا وائرس کا شکار ہوگئے تھے اور سانس کی تکلیف کے باعث انہیں بھارتی ریاست کیرالا کے مقامی اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔55 سالہ نغمہ نکار کو کورونا کے علاج کے دوان ہی دل کا دورہ پڑا جو جان لیوا ثابت ہوا۔ بھارتی نغمہ نگار کی اچانک موت پر پوری انڈسٹری صدمے سے دوچار ہوگئی اور کئی اداکاروں نے ان کے انتقال پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔انیل پنچورن نے متعدد فلموں کیلئے گیت لکھے جو بہت مشہور ہوئے ہیں جبکہ کئی فلموں میں اداکاری بھی کی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *