سانحہ مچھ میں ملوث ملزمان کسی رعایت کے مستحق نہیں،وزیراعظم

سانحہ مچھ میں ملوث ملزمان کسی رعایت کے مستحق نہیں،وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سانحہ مچھ میں ملوث ملزمان کسی رعایت کے مستحق نہیں،اسامہ ستی کی موت پرافسوس ہوا ، واقعہ میں ملوث پولیس اہلکاروں کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے،ایسے بے رحم لوگ پولیس میں نہیں ہونے چاہئیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت منگل کو وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں سانحہ مچھ میں جاں بحق ہونیوالے مزدوروں اور اسلام آباد میں پولیس فائرنگ میں جاں بحق ہونیوالے اسامہ ستی کیلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی ۔وفاقی کابینہ اجلاس میں وزیراعظم نے سانحہ مچھ اور وفاقی دارالحکومت میں پولیس کے ہاتھوں نوجوان اسامہ ستی کے قتل پر افسوس کا اظہارکیا گیا ۔وزیراعظم نے ایسے واقعات کی روک تھام کیلئے سخت اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی اور کہاکہ ایسے بے رحم لوگ پولیس میں نہیں ہونے چاہئیں ،وزیراعظم نے ہدایت کی کہ واقعہ میں ملوث پولیس اہلکاروں کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے اور سانحہ مچھ میں ملوث ملزمان کو فوری گرفتار کرکے انجام تک پہنچایا جائے۔وزیراعظم کو کورونا کے بڑھتے کیسز اوران کے تدارک کیلئے انتظامات پر بریفنگ دی گئی، ٹریڈ آرگنائزیشن ایکٹ کے تحت اپیلوں کی سماعت پر کابینہ کو دی گئی ۔ اجلاس میں پاکستان ایکسپو سینٹرز کے چیئرمین بورڈ آف ڈایریکٹرز کی منظوری دیدی گئی ۔پریس کونسل آف پاکستان کے اراکین کی تقرری اور فش پراسیسنگ پلانٹس کی رجسٹریشن سے متعلق انسپکشن کمیٹی کی تشکیل کا معاملہ زیر غورآیا، متبادل توانائی ڈیولپمنٹ بورڈ کے سی ای او رانا عبدالجبار کے استعفے کا معاملہ بھی کابینہ زیرغور آیااوروزیراعظم نے عبدالجبارکا استعفیٰ قبول کرلیا۔ کابینہ ادارہ جاتی اصلاحات سے متعلق کمیٹی کے 17 دسمبر کے فیصلوں کی توثیق کی گئی ۔ کابینہ کمیٹی برائے قانون سازی کیسز کے 31 دسمبر کے فیصلوں کی بھی توثیق کردی گئی۔وفاقی کابینہ پریس کونسل آف پاکستان کے ممبران کی تقرری کی منظوری دے دی،کورونا ویکسین کی خریداری کے لیے پیپرا رولز سے استثنیٰ کی منظوری دے دی گئی۔نوشہرہ میں ریلوے اور وزارت دفاع کے درمیان کثیر المنزلہ عمارت کی تعمیر کا معاملہ موخرکردیا گیا۔کابینہ اجلاس میں فش پراسیسنگ پلانٹس کی رجسٹریشن سے متعلق انسپکشن کمیٹی کی تشکیل کی منظوری دی گئی جبکہ 1997میں اسٹبلشمنٹ سے متعلق کابینہ کے فیصلہ پر نظرثانی کے معاملہ موخرکردیا گیا۔قبل ازیں وزیراعظم سے وفاقی وزیر دداخلہ شیخ رشید احمد اور ڈاکٹر بابراعوان نے ملاقات کی اورشیخ رشید کی جانب سے وزیراعظم کو سانحہ مچھ اور اس کے متاثرین سے ہونیوالے مذاکرات کے حوالے سے آگاہ کیا جبکہ ڈاکٹر بابراعوان نے وزیراعظم کو اسلام آباد میں پولیس کے ہاتھوں نوجوان اسامہ ستی کے قتل کے معاملے پر بریفنگ دی گئی ۔ملاقات کے دوران ملکی کی مجموعی سکیورٹی و سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *